Mai Ne Aik Khawab Kiya Suna Dala

میں نے اک خواب کیا سنا ڈالا

میں نے اک خواب کیا سنا ڈالا

بھائیوں نے کنویں میں جا ڈالا

یار تم بھی عجب مداری ہو

سانپ رسی کو ہے بنا ڈالا

ایسی چائے کبھی نہ پی میں نے

سچ بتا تو نے اس میں کیا ڈالا

آنکھ بھر کے جب اس نے دیکھا تو

زرد موسم میں دل کھلا ڈالا

بس وہ نیکی ثواب بنتی ہے

دوش دریا جسے بہا ڈالا

میں کہیں لاپتہ نہ ہوں جاؤں

تو نے کس کھوج میں لگا ڈالا

کوئی سمجھے گا یا نہیں ارشدؔ

جو سنانا تھا وہ سنا ڈالا

ارشد محمود ارشد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(505) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arshad Mahmood Arshad, Mai Ne Aik Khawab Kiya Suna Dala in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Mahmood Arshad.