Milley Ga Uss Ka Mujhe Kiya Utha K Laya HooN

ملے گا اس کا مجھے کیا اٹھا کے لایا ہوں

ملے گا اس کا مجھے کیا اٹھا کے لایا ہوں

پرانے وقت کا سکہ اٹھا کے لایا ہوں

تمہاری تشنگی دیکھی نہیں گئی مجھ سے

میں اپنی اوک میں دریا اٹھا کے لایا ہوں

شب سیاہ میں کچھ تو مجھے سہولت ہو

کسی کی یاد کا تارا اٹھا کے لایا ہوں

جو ہو سکے تو ذرا مختلف بنا اب کے

میں قصر ذات کا ملبہ اٹھا کے لایا ہوں

یہ پیاس علم کی کچھ تو بجھائیے صاحب

بڑے جتن سے میں بستہ اٹھا کے لایا ہوں

حوالے دھوپ کے جس نے مجھے کیا اک دن

اسی کے واسطے سایہ اٹھا کے لایا ہوں

تمام اشک سرابوں میں ڈھل گئے ارشدؔ

شکستہ آنکھ میں صحرا اٹھا کے لایا ہوں

ارشد محمود ارشد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(493) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arshad Mahmood Arshad, Milley Ga Uss Ka Mujhe Kiya Utha K Laya HooN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Mahmood Arshad.