Utha Rahe Ho Ju Yun Apne Astaan Se Mujhe

اٹھا رہے ہو جو یوں اپنے آستاں سے مجھے

اٹھا رہے ہو جو یوں اپنے آستاں سے مجھے

نکال کیوں نہیں دیتے ہو داستاں سے مجھے

خبر نہیں ہے کہ میں کس گھڑی چلا جاؤں

صدائیں آنے لگیں اب تو آسماں سے مجھے

یہ جانتا ہی نہیں ہوں کہاں میں بھول آیا

وہ ایک راز جو کہنا تھا رازداں سے مجھے

نکال سکتا نہیں ہوں میں دل سے حب حسین

وراثتوں میں ملی جو کہ اپنی ماں سے مجھے

میں جانتا ہوں اگر آج تم گنوا دو گے

تلاش کرنا ہے کل تم نے پھر یہاں سے مجھے

جو زخم زخم ہوں طعنوں کے تیر کھا کھا کے

تو مار کیوں نہیں دیتے ہو اب کے جاں سے مجھے

گزر گیا ہے جو لمحہ وہ پھر نہیں آیا

ملا ہے درس یہی عمر رائیگاں سے مجھے

پہنچ تو جاؤں گا میں بھی یقیں کے ساحل پر

نکالے کوئی تو ارشدؔ پر اس گماں سے مجھے

ارشد محمود ارشد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(473) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arshad Mahmood Arshad, Utha Rahe Ho Ju Yun Apne Astaan Se Mujhe in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Mahmood Arshad.