Zameen Ki Kookh Se Pehle Shajat Nikalta Hai

زمیں کی کوکھ سے پہلے شجر نکالتا ہے

زمیں کی کوکھ سے پہلے شجر نکالتا ہے

وہ اس کے بعد پرندوں کے پر نکالتا ہے

شب سیاہ میں جگنو بھی اک غنیمت ہے

ذرا سا حوصلہ اندر کا ڈر نکالتا ہے

کہ بوڑھے پیڑ کے تیور بدلنے لگتے ہیں

کہیں جو گھاس کا تنکا بھی سر نکالتا ہے

پھر اس کے بعد ہی دیتا ہے کام کی اجرت

ہمارے خون سے پہلے وہ زر نکالتا ہے

وظیفہ تجھ کو بتاتا ہوں ایک چاہت کا

جو قصر ذات سے نفرت کا شر نکالتا ہے

کہانی لکھتا ہے ایسے کہ اس کا ہر کردار

نکلنا کوئی نہ چاہے مگر نکالتا ہے

میں ایسے شخص سے ارشدؔ گریز کیسے کروں

فصیل دل میں جو دستک سے در نکالتا ہے

ارشد محمود ارشد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(567) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arshad Mahmood Arshad, Zameen Ki Kookh Se Pehle Shajat Nikalta Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Mahmood Arshad.