Bass Aik Shaab Ju Mere Pelhu Nasheen Thi

بس اک شب جو مری پہلو نشیں تھی

بس اک شب جو مری پہلو نشیں تھی

وہ لڑکی فاحشہ ہرگز نہیں تھی

اسے درکار تھا رونے کو شانہ

مرے دل میں بھی کچھ خالی زمیں تھی

ہر اک عضو ِ بدن تھا لب بہ نغمہ

مثالی گفتگو وجد آفریں تھی

اْسی کے سائے میں تھا محو ِ آرام

کہ ہر اک سانس جس کی آتشیں تھی

بدن کے زاویے سب کہہ رہے تھے

وہ میری روح میں شامل کہیں تھی

سمٹ آئی تھیں اْس میں کتنی صدیاں

وہ اک لمحے کی ساتھی بہتریں تھی

گلابوں میں مہکتا وہ بدن تھا

ستاروں سے مزین وہ جبیں تھی

مسلسل سوچتے رہنا اب اشفاق

حسیں تھی اور وہ کتنی حسیں تھی؟

اشفاق حسین

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1026) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ashfaq Hussain, Bass Aik Shaab Ju Mere Pelhu Nasheen Thi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 74 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ashfaq Hussain.