Darya Ki Gumshudgi

دریا کی گْم شدگی

چاند کے زعفرانی ہاتھ

اور اس کی جادو بھری انگلیوں کے غضب ناک ہونے سے

سمندر بھی ڈرتا ہے

آج بھی ڈر کا وہی موسم ہے

سمندر اپنے پاؤں کی کالی کیچڑ چھوڑ کر

دو قدم پیچھے ہٹ گیا ہے

ایسا تو اکثر ہوا کرتا ہے

مگر آج موقعے سے فائدہ اٹھا کر

دریا نے اپنی گم شدگی کا اعلان کردیا ہے

گم شدگی کے اس مقام سے ذرا فاصلے پر

کالی کیچڑ

اپنے یتیم ماتھے پر

شرمندگی کا جھومر لٹکائے

چپ چاپ بیٹھی ہے

دریا کا اچانک غائب ہوجانا

کسی بڑے طوفان کی پیشن گوئی ہے

وہاں

جس جگہ پر دریا گم ہوگیا ہے

وہیں سے کچھ اور فاصلے پر

آسیب زدہ گھروں کی بے رنگ کھڑکیوں سے

آنکھوں میں چبھنے والی تیز روشنی

ادھ کھلی پلکوں کے سائبانوں کو

چھلنی کیے دے رہی ہیں

شاید ابھی تک

ان گھروں کے مکینوں کو

دریا کی گم شدگی کی خبر ہی نہیں ہے

یا خود انہوں نے دریا کو اغوا کرلیا ہے

سمندر کی سمجھ دار موجوں کی نظریں ابھی تک

اس چٹھی پر مرکوز ہیں

جس میں

دریا کی بازیابی کے لیے تاوان مانگا گیا ہے

بہت مجبوری کے عالم میں

سمندر یہ تاوان دے بھی سکتا ہے

اور شاید دے بھی دے

مگر زمین اور سمندر کے بیچ

قبائلی دشمنیوں کی

ایک دیوار سی کھڑی ہو جائے گی

اس دیوار کو گرانے کی طاقت کس میں ہوگی ؟

اشفاق حسین

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(612) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ashfaq Hussain, Darya Ki Gumshudgi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ashfaq Hussain.