Iss Ankh Na Iss Dil Se Nikale Hue Hum Hain

اس آنکھ نہ اس دل سے نکالے ہوئے ہم ہیں

اس آنکھ نہ اس دل سے نکالے ہوئے ہم ہیں

یوں ہے کہ ذرا خود کو سنبھالے ہوئے ہم ہیں

اس بزم میں اک جشن چراغاں ہے انہی سے

کچھ خواب جو پلکوں پہ اجالے ہوئے ہم ہیں

کچھ اور چمکتا ہے یہ دل جیسا ستارا

کن درد کی لہروں کے حوالے ہوئے ہم ہیں

دل ہے کہ کوئی فیصلہ کر ہی نہیں پاتا

اک موج تذبذب کے اچھالے ہوئے ہم ہیں

وہ ہو نہ سکا اپنا تو ہم ہو گئے اس کے

اس شخص کی مرضی ہی میں ڈھالے ہوئے ہم ہیں

اس مملکت لفظ و بیاں میں بھی تو اشفاقؔ

اک راہ الگ اپنی نکالے ہوئے ہم ہیں

اشفاق حسین

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(426) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ashfaq Hussain, Iss Ankh Na Iss Dil Se Nikale Hue Hum Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 74 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ashfaq Hussain.