مشہور شاعر آشفتہ چنگیزی کی غزل شاعری ۔ آشفتہ چنگیزی کی غزلیں

ٹھکانے یوں تو ہزاروں ترے جہان میں تھے

آشفتہ چنگیزی

تم نے لکھا ہے لکھو کیسا ہوں میں

آشفتہ چنگیزی

یہ بھی نہیں بیمار نہ تھے

آشفتہ چنگیزی

صدائیں قید کروں آہٹیں چرا لے جاؤں

آشفتہ چنگیزی

سلسلہ اب بھی خوابوں کا ٹوٹا نہیں

آشفتہ چنگیزی

تعبیر اس کی کیا ہے دھواں دیکھتا ہوں میں

آشفتہ چنگیزی

صدائیں قید کروں آہٹیں چرا لے جاؤں

آشفتہ چنگیزی

سلسلہ اب بھی خوابوں کا ٹوٹا نہیں

آشفتہ چنگیزی

تعبیر اس کی کیا ہے دھواں دیکھتا ہوں میں

آشفتہ چنگیزی

پناہیں ڈھونڈ کے کتنی ہی روز لاتا ہے

آشفتہ چنگیزی

رونے کو بہت روئے بہت آہ و فغاں کی

آشفتہ چنگیزی

سبھی کو اپنا سمجھتا ہوں کیا ہوا ہے مجھے

آشفتہ چنگیزی

کس کی تلاش ہے ہمیں کس کے اثر میں ہیں

آشفتہ چنگیزی

کسے بتاتے کہ منظر نگاہ میں کیا تھا

آشفتہ چنگیزی

کوئی غل ہوا تھا نہ شور خزاں

آشفتہ چنگیزی

جس کی نہ کوئی رات ہو ایسی سحر ملے

آشفتہ چنگیزی

جس سے مل بیٹھے لگی وہ شکل پہچانی ہوئی

آشفتہ چنگیزی

خبر تو دور امین خبر نہیں آئے

آشفتہ چنگیزی

ہمیں سفر کی اذیت سے پھر گزرنا ہے

آشفتہ چنگیزی

ہوائیں تیز تھیں یہ تو فقط بہانے تھے

آشفتہ چنگیزی

اتنا کیوں شرماتے ہیں

آشفتہ چنگیزی

گھروندے خوابوں کے سورج کے ساتھ رکھ لیتے

آشفتہ چنگیزی

گزر گئے ہیں جو موسم کبھی نہ آئیں گے

آشفتہ چنگیزی

ہمارے بارے میں کیا کیا نہ کچھ کہا ہوگا

آشفتہ چنگیزی

Records 1 To 24 (Total 51 Records)