Baat Adhuri Karti Ho

بات ادھوری کرتی ہو

بات ادھوری کرتی ہو

پھر بھی شکوے ہزار کرتی ہو

چاند سے کتنا دور رہتی ہو

پھر بھی پاس رہتی ہو

چپ چاپ سب سہتی ہو

پھر بھی ہستی مسکراتی رہتی ہو

زبان پہ لاکھ قفل سجائے رکھتی ہو

پھر بھی سب کہہ دیتی ہو

محبت اچھی کرتی ہو

پھر بھی چھپائے رکھتی ہو

پر کٹے رکھتی ہو

پھر بھی اڑان بھرتی ہو

چھپکلی سے ڈرتی ہو

پھر بھی حوصلہ کمال رکھتی ہو

ہزار زخم لیے پھرتی ہو

پھر بھی خواب سجائے رکھتی ہو

اے پاگل لڑکی !

تم بھی نہ حد کرتی ہو

اسماء طارق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(653) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Asma Tariq, Baat Adhuri Karti Ho in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 6 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Asma Tariq.