Aaisa Yeh Dard Hai K Bhulaya Na Jaye Ga

ایسا یہ درد ہے کہ بھلایا نہ جائے گا

ایسا یہ درد ہے کہ بھلایا نہ جائے گا

معیار عشق ان سے بڑھایا نہ جائے گا

اس بار ان سے کہہ دو قدم سوچ کر رکھیں

اجڑا جو پھر یہ شہر بسایا نہ جائے گا

جو لوگ بغض دل میں چھپائے ہیں آج بھی

ان سے مرے مکان میں آیا نہ جائے گا

حق بات بولنے سے کیا جس کسی نے خوف

محفل میں پھر کبھی بھی بلایا نہ جائے گا

تھے متفق تو بات سے میری سبھی مگر

شیوہ مرا خیال بنایا نہ جائے گا

شاید اسی لیے نہیں آئے وہ میرے پاس

جو آ گئے تو چھوڑ کے جایا نہ جائے گا

گر احترام کر نہ سکے بزم ناز کا

شرمندگی سے سر کو اٹھایا نہ جائے گا

زہر آب میرے واسطے وہ لے تو آئے گا

ساقی سے جام ہم کو پلایا نہ جائے گا

اسریٰؔ بنا لو شوق کو اپنے جنوں کی آگ

اک بار بجھ گئی تو جلایا نہ جائے گا

اسریٰ رضوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(432) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Asra Rizvi, Aaisa Yeh Dard Hai K Bhulaya Na Jaye Ga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 27 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Asra Rizvi.