Aam Raste Se Hat K Aya HooN

عام رستے سے ہٹ کے آیا ہوں

عام رستے سے ہٹ کے آیا ہوں

ساری دنیا سے کٹ کے آیا ہوں

میری وسعت تجھے ڈرا دیتی

اپنے اندر سمٹ کے آیا ہوں

کوئی تازہ ستم کہ میں پچھلے

حادثوں سے نمٹ کے آیا ہوں

ہاں محبت تو مار دیتی ہے

یہ کہانی میں رٹ کے آیا ہوں

میری حالت سے ماپ رستے کو

میں کہاں سے پلٹ کے آیا ہوں

راہ غم اب ڈرا نہیں سکتی

غم سے ہی تو لپٹ کے آیا ہوں

اس کی شاخوں پہ پھل نہیں لگتا

جس شجر سے میں کٹ کے آیا ہوں

کوئی صورت نہیں ہے جڑنے کی

اتنے ٹکڑوں میں بٹ کے آیا ہوں

اورنگزیب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(494) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aurang Zeb, Aam Raste Se Hat K Aya HooN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 25 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aurang Zeb.