Main Ne Wo Nazm Likhi Hia K Khuda Janta Hai

میں نے وہ نظم لکھی ہے کہ خدا جانتا ہے

میں نے وہ نظم لکھی ہے کہ خدا جانتا ہے

اس کا ہر لفظ خدائی کا پتا جانتا ہے

میری آنکھوں میں یہ تصویر ذرا غور سے دیکھ

مجھ کو اس شخص سے ملنا ہے بتا جانتا ہے

میں بھی زنجیر نہیں ہوتا کسی وحشت سے

وہ بھی تنہائی سے بچنے کی دعا جانتا ہے

دن تو میں پھر بھی کسی ڈھب سے بتا لیتا ہوں

رات جو مجھ پہ گزرتی ہے خدا جانتا ہے

میری صورت یہ دکھائے بھی تو کیسے مجھ کو

میرے بارے میں یہ آئینہ بھی کیا جانتا ہے

میرے کشکول کو بھر دے کہ میں خالی ہوں بہت

تجھ سوا کون سخی میرا پتا جانتا ہے

دل کے بارے میں میں تفصیل بتاؤں تمہیں کیا

مختصر یہ کہ محبت کو سزا جانتا ہے

مسئلہ یہ ہے کہ میں خوش ہوں اکیلا ہو کر

اس قدر خوش کہ فقط میرا خدا جانتا ہے

زندگی کھیل ہے شطرنج سے بھی پیچیدہ

جاننے والا بھی اس باب میں کیا جانتا ہے

حرف کو حرف بتاتا ہے وہ خاموش دہن

صوت کو صوت سمجھتا ہے صدا جانتا ہے

میرؔ کی مجھ کو سند دے تو میں سوچوں اس پر

ناروا حرف کو جو حرف روا جانتا ہے

دل دھڑکنے کی بھی آواز نہیں آتی زیبؔ

ایسی خاموشی کو تو کیسے صدا جانتا ہے

اورنگزیب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(459) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aurang Zeb, Main Ne Wo Nazm Likhi Hia K Khuda Janta Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 25 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aurang Zeb.