Jane Kaisa Soog Manaya Jata Hai

جانے کیسا سوگ منایا جاتا ہے

جانے کیسا سوگ منایا جاتا ہے

کچھ قبروں پر دیا جلایا جاتا ہے

کچھ جسموں کی لذت پوری کرنے کو

کچھ جسموں کو کھینچ کے لایا جاتا ہے

وہ آنکھیں پنجرے میں ہوتی ہیں جن کو

آزادی کا خواب دکھایا جاتا ہے

وصل تو پہلا راگ ہے سب گا لیتے ہیں

ہجر کہاں ہر ایک سے گایا جاتا ہے

کچھ نقطے الفاظ کی زینت ہوتے ہیں

کچھ نقطوں سے کام چلایا جاتا ہے

ممکن ہے کہ رونے کا کچھ وقت ملے

بارش کا امکان بتایا جاتا ہے

ازبر سفیر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(822) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Azbar Safeer, Jane Kaisa Soog Manaya Jata Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Azbar Safeer.