Tum Kabhi Able Pairoon Pey Saja Kar Dekho

تم کبھی آبلے پیروں پہ سجا کر دیکھو

تم کبھی آبلے پیروں پہ سجا کر دیکھو

آگہی ملتی ہے صحراؤں میں جا کر دیکھو

عرصۂ خواب کے اسرار کھلیں گے تم پر

اپنی آواز میں کچھ سوز رچا کر دیکھو

شاخ در شاخ قیامت کا فغاں اٹھے گا

پھول پر بیٹھی ہوئی تتلی اڑا کر دیکھو

کس قدر ہوتا ہے تاراج سکون گلشن

پھول سے تو ذرا تتلی کو گرا کر دیکھو

رد نہیں ہوتی کبھی سنتے یہی آئے ہیں

چاندنی رات میں ملنے کی دعا کر دیکھو

منتظر کون کھڑا کون پڑا ہے در پر

تم لٹکتی ہوئی چلمن کو ہٹا کر دیکھو

بن بھی سکتا ہے محبت کا فسانہ عادلؔ

تم اسے رکھنا سدا دل میں چھپا کر دیکھو

عزیز عادل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(332) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aziz Adil, Tum Kabhi Able Pairoon Pey Saja Kar Dekho in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aziz Adil.