Dukh Simat Kar Meri Tehreer Main Aa Jata Hai

دکھ سمٹ کر مری تحریر میں آ جاتا ہے

دکھ سمٹ کر مری تحریر میں آ جاتا ہے

درد الفاظ کی زنجیر میں آ جاتا ہے

رات کو خواب میں گر سانپ سے بچ جاتا ہوں

پھر کسی روز وہ تعبیر میں آ جاتا ہے

غم کی دولت ہے کہ بڑھتی ہی چلی جاتی ہے

نت نیا غم مری جاگیر میں آ جاتا ہے

قتل سے بھی کہیں اغماض کیا جاتا ہے

بولنا بھی کہیں تعزیر میں آ جاتا ہے

کوئی آتا نہیں یاں میری حمایت کرنے

شہر کا شہر ہی تشہیر میں آ جاتا ہے

عزم الحسنین عزمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(971) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Azm Ul Hasnain Azmi, Dukh Simat Kar Meri Tehreer Main Aa Jata Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 8 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Azm Ul Hasnain Azmi.