Khabar Shaaki Hai

خبر شاکی ہے

خبر شاکی ہے تم مجھ کو

فقط قصہ سمجھ کر ہی نظر انداز کرتے ہو

کبھی سوچا ہے تم نے یہ کہ

اک چھوٹے سے قصے نے

خبر بننے کے پہلے کیا جتن جھیلے ستم کاٹے

کسی بے نام کوچے سے نکل کر سامنے آیا

سسکتے اونگھتے لوگوں کو چونکایا

بہت کچھ اور بھی کرتا ہوا قصہ خبر کا روپ لیتا ہے

مگر تم تو فقط قصہ سمجھ کر چھوڑ دیتے ہو

سبب اس کا یہ ہے شاید

یہاں ہے موت بھی معمول میں شامل

کنوارے بے زباں جسموں پہ حملے روز ہوتے ہیں

ڈکیتی قتل اغوا لوٹ اور آتش زنی

بہت کچھ ہوتا ہی رہتا ہے

نیا جیسے کہیں کچھ بھی نہیں

لیکن کبھی تم پر

اور ان پر بھی کہ جن پر سب گزرتا ہے

سبھی کچھ خاص تب ہوگا

کبھی تم پر بھی کچھ گزرے

خبر شاکی ہے تم مجھ کو

فقط قصہ سمجھ کر چھوڑ دیتے ہو

بدر واسطی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(847) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Badr Wasti, Khabar Shaaki Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 15 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Badr Wasti.