Dasht Wafa Main Thokrain Khanay Ka Shoq Tha

دشت وفا میں ٹھوکریں کھانے کا شوق تھا

دشت وفا میں ٹھوکریں کھانے کا شوق تھا

اب ہر قدم پہ اڑتی ہے کالی ہری ہوا

تنہا کہاں ہوں گو کہ یہاں کوئی بھی نہیں

مجھ سے لپٹ کے سوتا ہے سایہ خفا خفا

ہیں گل مہر کے پیڑ بھی دریا بھی دھوپ بھی

خاموش دیکھتا ہے ہر اک شے کو بے نوا

جینے کی راہ چھوڑ کے آگے نکل گیا

منزل پکارتی رہی جاتا ہے سرپھرا

نغمہ بنا کے مجھ کو فضا میں اڑا دیا

اب میں کہاں سے ڈھونڈ کے لاؤں تری صدا

باقر مہدی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(395) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Baqar Mehdi, Dasht Wafa Main Thokrain Khanay Ka Shoq Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Baqar Mehdi.