Poetry of Bashir Ahmad Shad, Urdu Shayari of Bashir Ahmad Shad

بشیر احمد شاد کی شاعری

فروغ شام کا منظر اس آفتاب میں تھا

Faroogh Shaam Ka Manzar Iss Aftab Main Tha

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

ان علم و آگہی کی کتابوں میں کچھ نہیں

In Ilm O Agahai Ki Kitaboon Main Kuch Nahi

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

کل زندگی کے خواب کی تعبیر مل گئی

Kaal Zindagi K Khawab Ki Tabeer Mill Gayi

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

دشت غربت میں اگر ساتھ تمہارا ہوتا

Dasht Gurbat Main Ager Sath Tumhara Hota

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

زخم تو زخم ہے کچھ دیر میں بھر جائے گا

Zakham Tu Zakhm Hai Kuch Deer Main Bhar Jaye Ga

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

راتوں کی گود میں تھے عذابوں کے سلسلے

Raat Ki Godd Main Thay Azaboon K Silsale

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

سفر کٹھن ہے میں راہوں سے آشنا بھی نہیں

Safar Kathan Hai Main Rahu Se Ashna Bhi Nahi

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

خلقت شہر تو کہنے کو فسانے مانگے

Khalqat Sheher Tu Kehne Ko Fasane Mange

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

گھبرا گئے تھے راہ کو پر خار دیکھ کر

Ghabra Gaye Thay Rah Ko Purkhar Dekh Kar

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

میں نے جس کو چاہا تھا

Main Ne Jiss Ko Chaha Tha

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

وقت کی قید سے آزاد کرانے آئے

Waqt Ki Qaid Se Azad Karane Aaye

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

وقت کی قید سے آزاد کرانے آئے

Waqt Ki Qaid Se Azad Karane Aye

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

میں چلا جاؤں گا مری دل لگی رہ جائے گی

Main Chala Jaoon Ga Meri Dil Lagi Reh Jaye Gi

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

ہم جان کے ان کی محفل میں اغیار کی باتیں کرتے ہیں

Hum Jaan K Un Ki Mehfil Main Agiyar Ki Batain Karte Hain

(Bashir Ahmad Shad) بشیر احمد شاد

Urdu Poetry & Shayari of Bashir Ahmad Shad. Read Ghazals, Love Poetry, Sad Poetry, Social Poetry, Friendship Poetry, Bewafa Poetry, Heart Broken Poetry, Hope Poetry of Bashir Ahmad Shad, Ghazals, Love Poetry, Sad Poetry, Social Poetry, Friendship Poetry, Bewafa Poetry, Heart Broken Poetry, Hope Poetry and much more. There are total 14 Urdu Poetry collection of Bashir Ahmad Shad published online.