Sab Ki Mojoodgi Samjhta Hai

سب کی موجودگی سمجھتا ہے

سب کی موجودگی سمجھتا ہے

دل کسی کی کمی سمجھتا ہے

ایک ہی شخص سے میں واقف ہوں

جو مجھے اجنبی سمجھتا ہے

گو مجھے جانتا نہیں لیکن

وہ مری شاعری سمجھتا ہے

وصل کے اشک ہجر کے آنسو

وہ نمی کو نمی سمجھتا ہے

وہی میری زباں سے ہے واقف

جو مری خامشی سمجھتا ہے

آپ کے سامنے میں خوش ہوں مگر

میرے دکھ رام ہی سمجھتا ہے

یہی اردو زباں کا ہے جادو

اب مجھے ہر کوئی سمجھتا ہے

میں اسے بات دل کی کہتا ہوں

وہ اسے شاعری سمجھتا ہے

اتنا نادان بھی نہیں ہے وہ

جو تمہاری ہنسی سمجھتا ہے

کون مہتابؔ اب تمہارا ہے

کون دل کی لگی سمجھتا ہے

بشیر مہتاب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1004) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Bashir Mehtaab, Sab Ki Mojoodgi Samjhta Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 11 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Bashir Mehtaab.