Kufr Aik Rang E Qudrat E Bay Inteha MeiN Hae

کفر ایک رنگ قدرت بے انتہا میں ہے

کفر ایک رنگ قدرت بے انتہا میں ہے

جس بت کو دیکھتا ہوں وہ یاد خدا میں ہے

عاشق ہے جو کہ جامۂ صدق و صفا میں ہے

معشوق ہے جو پردۂ حلم و حیا میں ہے

عالم ہے مست سجدۂ جاناں میں تا ابد

مستی بلا کی بادۂ ''قالو بلیٰ'' میں ہے

ایماں ہے عکس رخ تو ہے گیسو کا عکس کفر

وہ کون چیز ہے جو تری ماسوا میں ہے

ابرو کے محو کعبے میں صورت کے دیر میں

عشاق رخ کا سلسلہ نور و ضیا میں ہے

بے جلوہ گاہ یار کہاں یہ رجوع خلق

بحث فضول برہمن و پارسا میں ہے

جویا ہے بس کہ عارض و گیسوئے یار کا

پابند شیخ سجدۂ صبح و مسا میں ہے

رفتار معجزہ ہے تو ہے سحر چال میں

شوخی عجب طرح کی ترے نقش پا میں ہے

تیری طرف کو مسلم و کافر کی ہے رجوع

پوجا میں برہمن ہے تو زاہد دعا میں ہے

مقتول لاکھوں ہو چکے شائق ہزارہا

لذت عجیب یار کی تیغ جفا میں ہے

اک پیچ و خم میں گبر و مسلماں ہیں مبتلا

وسعت بلا کی یار کی زلف رسا میں ہے

بہرامؔ عاشقانہ غزل ایک اور بھی

قوت ابھی بہت تری فکر رسا میں ہے

بہرام جی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(622) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Behraam Ji, Kufr Aik Rang E Qudrat E Bay Inteha MeiN Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 15 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Behraam Ji.