Dil Ki Zuba Se Is Ko Sada Dena Chahiye

دل کی زباں سے اس کو صدا دینا چاہیے

دل کی زباں سے اس کو صدا دینا چاہیے

بیٹھے گلا تو ایسے بلا لینا چاہیے

نظریں چرا بچا کے اٹھا لینا چاہیے

اوروں کے درد کا بھی مزا لینا چاہیے

بستر پہ آسمان کے ٹھٹھرے ہے چندر ما

بادل ادھر ادھر سے دبا لینا چاہیے

کاندھے سمے کے بوجھ سے شل ہو گئے تو کیا

یہ بوجھ مسکرا کے اٹھا لینا چاہیے

کچھ گمرہی تمہیں پہ نہیں فرض رہروو

منزل کو بھی تو راہ میں آ لینا چاہیے

ایسے بزرگ بخت رہا جن کا نارسا

ایسوں سے زندگی کی دعا لینا چاہیے

آئنہ تک تو الٹی کہے ہے اگر فریب

کھانا ہو کوئی دوست بنا لینا چاہیے

ان کو پرائے اشکؔ لگیں ہیں اگر عزیز

غیروں میں اپنا نام لکھا لینا چاہیے

بمل کرشن اشک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1362) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Bimal Krishn Ashk, Dil Ki Zuba Se Is Ko Sada Dena Chahiye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 36 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Bimal Krishn Ashk.