Hasad Ki Aag Dil Main Laga Rahe Ho

حسد کی آگ دل میں لگا رہے ہو

حسد کی آگ دل میں لگا رہے ہو

اپنے جسم کو خود جلا رہے ہو

میں یہ نہیں کہتا کہ سب کو پارسا جانو

مگر اہل ظرف کو کیوں نیچا دکھا رہے ہو

حق پرستوں کی صف میں کھڑا ہوں میں

باطل کے ساتھ ہو تم خود کو گرا رہے ہو

میرے لفظوں کی طاقت تمہیں ہرا دے گی

میری قلم چلتی رہے گی میری آواز کیوں دبا رہے ہو

تمہیں اتنا کہوں گا اپنی عادتیں بدل لو

پہلے خود سیکھ لو جو دوسروں کو سیکھا رہے ہو

سینہ تان کے میں چل رہا ہوں جب

پیٹھ پہ وار کیوں کروا رہے ہو

تمہیں اپنا دوست مانتا ہوں میرے یار

اور تم مجھ پہ ہی چھریاں چلا رہے ہو

مومن ہوں لڑتا ہوں اپنے زور بازوں پہ

میرا جذبہ سلامت ہے تم میرے جسم کو ہرا رہے ہو

کسی کی مخالفت سے گھبراتا نہیں عاطف

مگر اے کم ظرف تم منافقت دیکھا رہے ہو

چوہدری محمد عاطف آرائیں

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(649) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ch Muhammad Atif Arain, Hasad Ki Aag Dil Main Laga Rahe Ho in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ch Muhammad Atif Arain.