Ujala Hi Ujala Roshni Hi Roshni Hai

اُجالا ہی اُجالا ، روشنی ہی روشنی ہے

اُجالا ہی اُجالا ، روشنی ہی روشنی ہے

اندھیرے میں جو تیری آنکھ مجھ کو دیکھتی ہے

ابھی جاگا ہوا ہوں میں کہ تھک کر سو چکا ہوں

دیئے کی لو سے کوئی آنکھ مجھ کو دیکھتی ہے

تجسس ہر اُفق پر ڈھونڈتا رھتا ہے اس کو

کہاں سے اور کیسی آنکھ مجھ کو دیکھتی ہے

عمل کے وقت یہ احساس رھتا ہے ہمیشہ

مرے اندر سے اپنی آنکھ مجھ کو دیکھتی ہے

میں جب بھی راستے میں اپنے پیچھے دیکھتا ہوں

وہی اشکوں میں بھیگی آنکھ مجھ کو دیکھتی ہے

کہیں سے ہاتھ بڑھتے ہیں میرے چہرے کی جانب

کہیں سے سُرخ ہوتی آنکھ مجھ کو دیکھتی ہے

درختو ! مجھ کو اپنے سبز پتوں میں چھپا لو

فلک سے ایک جلتی آنکھ مجھ کو دیکھتی ہے

دانیال طریر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(259) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Daniyal Tareer, Ujala Hi Ujala Roshni Hi Roshni Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 56 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Daniyal Tareer.