Paba Gil Rehne Ki Adat Ka Mazza Lete Hain

پا بہ گِل رہنے کی عادت کا مزہ لیتے ہیں

پا بہ گِل رہنے کی عادت کا مزہ لیتے ہیں

خود کشیدہ سی فراغت کا مزہ لیتے ہیں

رنج و غم پہلے تو جی بھر کے کما لیتے ہیں

پھر اسی درد کی دولت کا مزہ لیتے ہیں

عشق اک کارِ اذیّت ہے تو ہو گا یارو

ہم تو اس کارِ اذیّت کا مزہ لیتے ہیں

ہم ہمہ وقت خیالات کے پروردہ مزاج

اپنی وحدت میں ہی کثرت کا مزہ لیتے ہیں

تجھ سے اک بار تصور میں ملاقات کے بعد

شعر بننے کی لطافت کا مزہ لیتے ہیں

بے رُخی اس کو دکھاتے ہوئے کچھ دیر کو ہم

ایک ہلکی سی شرارت کا مزہ لیتے ہیں

ریت کے گھر وہ بناتے ہیں کسی صحرا میں

وہ جو خود ساختہ شہرت کا مزہ لیتے ہیں

کون دلشادترے حال کا پرساں ہو گا

آپ ہم اپنی عیادت کا مزہ لیتے ہیں

دلشاد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(466) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Dilshad Ahmed, Paba Gil Rehne Ki Adat Ka Mazza Lete Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 25 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Dilshad Ahmed.