Yeh Lutf Yeh Musarat Kiya Hai

یہ لطف ۔۔ یہ مسرت کیا ہے ۔۔؟

میرے محبوب

تمہیں یاد ہے

چاندنی راتوں میں

ہم عود و عنبر جلاتے تھے

کسی قدیم ساز پر کوئی راگنی بجاتے تھے

آن ہی آن میں

ہمارے سینوں سے غموں کا بوجھ اتر جاتا

ساری احمقانہ خواہشیں رخصت ہو جاتیں

بڑائی کی فضول سی امنگیں دم توڑ جاتیں

تم محبت سے پوچھتے

جانم اس خوشبو کی ماہیت کیا ہے ۔۔؟

میں کھوئے ہوئے لہجے میں پوچھتی

خوشبو کے دھوئیں کا رنگ کیسا ہے ؟

اور جب۔۔

کھڑکھیوں کے جھل مل پردے ہوا کی لے پر جھومتے تو بے اختیار ہو کر کہتی

دیکھو وہ سایہ کیسا گزرتا جا رہا ہے ؟

تم میرے ہاتھوں کو تھام لیتے ۔۔ چوم لیتے۔۔ پوچھتے

تمہاری انگلیوں کی پوروں میں سے کیسی آواز چھن چھن کر آرہی ہے ۔۔۔؟

میرے محبوب

یہ لطف ۔۔یہ مسرت کیا ہے ؟

جس نے برسا برس سے ہمیں وشال کر رکھا ہے

دنیا کی ہر حقیقت بے معنی سی بنا رکھی ہے

میں سوچ رہی ہوں ۔۔۔۔

ہمارے سامنے

اس لامحدود کائینات کی حقیقت کیا ہے ؟

ڈاکٹر نگہت نسیم

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(551) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Dr Nighat Nasim, Yeh Lutf Yeh Musarat Kiya Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 33 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Dr Nighat Nasim.