Yun Nah Mil Mujh Se Khafa Ho Jaisay

یوں نہ مل مجھ سے خفا ہو جیسے

یوں نہ مل مجھ سے خفا ہو جیسے

ساتھ چل موج صبا ہو جیسے

لوگ یوں دیکھ کے ہنس دیتے ہیں

تو مجھے بھول گیا ہو جیسے

عشق کو شرک کی حد تک نہ بڑھا

یوں نہ مل ہم سے خدا ہو جیسے

موت بھی آئی تو اس ناز کے ساتھ

مجھ پہ احسان کیا ہو جیسے

ایسے انجان بنے بیٹھے ہو

تم کو کچھ بھی نہ پتا ہو جیسے

ہچکیاں رات کو آتی ہی رہیں

تو نے پھر یاد کیا ہو جیسے

زندگی بیت رہی ہے دانشؔ

ایک بے جرم سزا ہو جیسے

احسان دانش

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(276) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ehsan Danish, Yun Nah Mil Mujh Se Khafa Ho Jaisay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 66 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ehsan Danish.