Koi Tofan Tu Nahi Koi Talatum Tu Nahi

کوئی طوفاں تو نہیں کوئی تلاطم تو نہیں

کوئی طوفاں تو نہیں کوئی تلاطم تو نہیں

زندگی نام ہے جس کا وہ کہیں تم تو نہیں

اور کیا کہیے گا آئینۂ حیرت کے سوا

ان کی محفل میں مجھے اذن تکلم تو نہیں

جس طرف دیکھیے اک نور تجلی پیدا

آپ کی بزم میں شامل مہ و انجم تو نہیں

اور کیا دل کی تباہی پہ توجہ دیتا

آپ دیکھیں مرے ہونٹوں پہ تبسم تو نہیں

آئنہ دیکھ کے اب پیار سا آ جاتا ہے

میری صورت سے نمایاں یہ کہیں تم تو نہیں

موسم لالہ و گل عہد بہار گلشن

یہ کہیں آپ کا انداز تبسم تو نہیں

منزلیں اپنی جگہ پر ہیں طلب اپنی جگہ

جا ہی پہنچے گا کہ احساسؔ ابھی گم تو نہیں

احساس مراد آبادی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(597) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ehsas Muradabadi, Koi Tofan Tu Nahi Koi Talatum Tu Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ehsas Muradabadi.