Sooz Awaz Main Lehje Main Khanak Hai Saqi

سوز آواز میں لہجے میں کھنک ہے ساقی

سوز آواز میں لہجے میں کھنک ہے ساقی

عشق کا تیرے یقیں تو نہیں شک ہے ساقی

میں نے کب تجھ سے کہا ہے مجھے شک ہے ساقی

تیرے ماتھے پہ ستاروں کی چمک ہے ساقی

کیا تری شوخئ گفتار کی تشریح کروں

کتنی شیرینی ہے اور کیسا نمک ہے ساقی

عشق کے سوز نے نغمات کو گرمی بخشی

اب ترے ساز میں شعلوں کی لپک ہے ساقی

میرے سانسوں میں جو بس جائے تو کیا اس کا علاج

تو نہیں پاس مگر تیری مہک ہے ساقی

میں بہک جاؤں تو یہ میری تنک ظرفی ہے

اور اگر نشہ نہ ہو کس کی ہتک ہے ساقی

دل احساسؔ میں جو روح تجلی ہے نہاں

چاند تاروں میں کہاں اس کی جھلک ہے ساقی

احساس مراد آبادی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1027) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ehsas Muradabadi, Sooz Awaz Main Lehje Main Khanak Hai Saqi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ehsas Muradabadi.