ڈھونڈ سایہ نہ شجر آگے بھی

(7694) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments