احیا بھوجپوری کی معاشرتی شاعری۔ معاشرتی نظمیں و غزلیں

کیوں ہر طرف تو خوار ہوا احتساب کر

احیا بھوجپوری

کتنا کمزور ہے ایمان پتا لگتا ہے

احیا بھوجپوری