Aag Mein Hath

آگ میں ہاتھ

آگ میں ہاتھ ڈال بیٹھا تھا

جانتا تھا کہ آگ سے جلنا

کس قدر کرب آزما ہو گا

کس قدر بے کراں اذیت کا

کس قدر سخت سامنا ہو گا

جانتا تھا اسی لیے تو سدا

اپنے سینے میں جل رہے جذبے

اپنی سوچوں سے دور رکھتا تھا

اور سوچوں میں جاگتے عنواں

نفس کے ہاتھ سے کچلتا تھا

جانتا تھا کہ زندگی کا شعور

اپنے اندر کی آگ میں گُم ہے

حدِ ادراک صرف دھوکہ ہے

کہ خدا قلبِ پاک میں گُم ہے

ہاں مگر قلب آگ مانگتا ہے

پاک ہونا عذاب مانگتا ہے

پھر بھلا آگ کی طلب کرنا

ایک آتش کی سمت چل پڑنا

کیسے اپنے لیے کوئی چُنتا

کیسے خواہش کے گھاٹ سے اُٹھتا

اس لیے آنکھ ہی نہیں کھولی

اپنی ہمت کبھی نہیں تولی

چاہتا تھا کہ راہ سادہ ہو

کسی مشکل سفر کی خواہش ہو

نہ بہت دُور کا ارادہ ہو

جستُجو ہو تو بس سُکون کی ہو

آرزو وٴں کا کچھ افادہ ہو

اور پھر وہ سکون پا بھی لیا

راستہ سادہ سا بنا بھی لیا

خواہشیں دسترس میں آ بھی گئیں

زندگی مل گئی سہولت کی

آرزوؤں کا سیج سج بھی گیا

اور تب اس گھڑی کسی نے کہا

زیست ہونی ہو تو عماد سی ہو

زندگی ہو تو بس جناب سی ہو

مَیں نہیں جانتا کہ اس لمحے

میرے اندر جمود تھا کہ اُٹھان

میرے اندر زمان تھا کہ مکان

ہاں مگر ایک سخت جھٹکا تھا

میں نے یکدم ٹھٹھک کے سوچا تھا

زیست؟ مجھ سی؟ عماد سی؟ کیونکر؟

یہ تو دھوکہ ہے نفس کا بھائی

جس کو پانی سمجھ رہے ہو میاں

یہ سرابِ حقیقتِ جاں ہے

اندھے جذبوں کا ایک طوفاں ہے

یہ کوئی مانگنے کی چیز نہیں

یہ کوئی چاہنے کی بات نہیں

مانگنا ہے تو رب سے وہ مانگو

جو نہ سادہ ہونہ قریب بہت

جس کی منزل سکوں سے آگے ہو

جس کا مقصد نشاطِ جان نہ ہو

بلکہ ادراکِ قلب ِ روشن ہو

وہ جو ٹھٹھکا تو رُک گیا گویا

دل کہیں اور جُھک گیا گویا

بس وہ ساعت عجیب ساعت تھی

بس وہ لمحہ عجیب لمحہ تھا

حال و ماضی سے کٹ چکا تھا میں

دل کے محور سے ہٹ چکا تھا میں

جس مقدر سے بچ کے چلتا تھا

اُس کے در پر پڑا ہوا تھا میں

اس گھڑی مَیں نڈھال بیٹھا تھا!

آگ میں ہاتھ ڈال بیٹھا تھا!

عماد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(597) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Emad Ahmad, Aag Mein Hath in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Emad Ahmad.