Ankh Se Ansu Ka Beh Jana Tu Achi Baat Hai

آنکھ سے آنسو کا بہہ جانا تو اچھی بات ہے

آنکھ سے آنسو کا بہہ جانا تو اچھی بات ہے

رو رلا کر درد سہہ جانا تو اچھی بات ہے

کہہ دیا جو منہ میں آیا، یہ ضروری تو نہیں

کچھ نہ کچھ دل میں ہی رہ جانا تو اچھی بات ہے

بِن بتائے بھی مجھے چھوڑا ہے لوگوں نے کئی

آپ کا یہ صاف کہہ جانا تو اچھی بات ہے

آپ ایسے مشورے غیروں کو جا کر دیجیے

اُن سے کہیے ناں کہ سہہ جانا تو اچھی بات ہے

میں اسے اپنی شکستِ فاش کیسے مان لوں

اس کے آگے میرا ڈھہ جانا تو اچھی بات ہے

ضبط سے کوئی نہ جیتا ہے نہ مرتا ہے عماد

اشک بن کر غم کا بہہ جانا تو اچھی بات ہے

عماد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(541) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Emad Ahmad, Ankh Se Ansu Ka Beh Jana Tu Achi Baat Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Emad Ahmad.