Mein Apne App Mein Gum HooN Ya Phir Aflak Mein Choro

مَیں اپنے آپ میں گُم ہوں یا پھر افلاک میں، چھوڑو

مَیں اپنے آپ میں گُم ہوں یا پھر افلاک میں، چھوڑو

سفر اندر ہو یا باہر مگر فاصل نہیں ہو گا

اگر مَیں روشنی ہوتا تو میری برق رفتاری

بالآخر تھک کے کہتی، زیست کا ساحل نہیں ہو گا

بدوں کو بد ملے، اچھوں کو اچھے، ہم نہ مل پائے

تو یا میں اس کے یا پھر وہ مرے قابل نہیں ہو گا

اداسی کا سفر اپنے ہی کچھ اسرار رکھتا ہے

ملے گا کچھ نہیں، لیکن یہ لاحاصل نہیں ہو گا

عماد اب دوستوں اور دشمنوں سب کو بلائے گا

بس اک وہ شخص جو دونوں طرح شامل نہیں ہو گا

عماد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(551) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Emad Ahmad, Mein Apne App Mein Gum HooN Ya Phir Aflak Mein Choro in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Emad Ahmad.