Raat Gehri Hai Tu Roo Lou Koi Dekhey Ga Nahi

رات گہری ہے تو رو لو، کوئی دیکھے گا نہیں

رات گہری ہے تو رو لو، کوئی دیکھے گا نہیں

خود کو اپنے میں سمو لو، کوئی دیکھے گا نہیں

خامشی سے اسے پانی کے حوالے کر دو

اپنے دامن کو بھگو لو، کوئی دیکھے گا نہیں

وہ بہن بھائی، وہ ماں باپ، وہ رشتے ناتے

سب کو اک ساتھ ہی رو لو، کوئی دیکھے گا نہیں

تم نے محفل میں مرے دل پہ گرہ باندھی تھی

آوٴ تنہائی میں کھولو، کوئی دیکھے گا نہیں

شرمساری ہے جو خود سے تو چلو اپنا وجود

ایک چُلو میں ڈبو لو، کوئی دیکھے گا نہیں

لوگ آئیں گے تو سو طرز کی باتیں ہوں گی

اپنے غم آپ ہی دھو لو، کوئی دیکھے گا نہیں

ہاں عماد آیا تھا، دروازے پہ دستک دی تھی

چاہا تھا تم اسے کھولو، کوئی دیکھے گا نہیں

عماد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(635) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Emad Ahmad, Raat Gehri Hai Tu Roo Lou Koi Dekhey Ga Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Emad Ahmad.