Nigah E BaghbaN Kuch MehrbaN Maloom Hoti Hae

نگاہ باغباں کچھ مہرباں معلوم ہوتی ہے

نگاہ باغباں کچھ مہرباں معلوم ہوتی ہے

زمیں پر آج شاخ آشیاں معلوم ہوتی ہے

بلایا جا رہا ہے جانب دار و رسن ہم کو

مقدر میں حیات جاوداں معلوم ہوتی ہے

نگاہوں میں ہیں کس کے عارض گل رنگ کے جلوے

کہ دنیا گلستاں در گلستاں معلوم ہوتی ہے

مری کشتی کو شکوہ بحر بے پایاں کی تنگی کا

تجھے ایک آب جو بھی بے کراں معلوم ہوتی ہے

پہنچ کر آسماں پر بھی تو دیکھو اے زمیں والو

وہاں سے یہ زمیں بھی آسماں معلوم ہوتی ہے

اعزاز افضل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(668) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ezaz Afzal, Nigah E BaghbaN Kuch MehrbaN Maloom Hoti Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ezaz Afzal.