Ojala Kaesa Ojalay Ka Khwaab Laa Na Skay

اجالا کیسا اجالے کا خواب لا نہ سکے

اجالا کیسا اجالے کا خواب لا نہ سکے

سحر سے مانگ کے ہم آفتاب لا نہ سکے

ہم اپنے چہرۂ بے داغ کے لئے اے عقل

تری دکان سے کوئی نقاب لا نہ سکے

جو چاند پر بھی گئے ہم تو خاک ہی لائے

زمیں کی نذر کو اک آفتاب لا نہ سکے

گئے تو تھے ترے جلووں کو جانچنے لیکن

بچا کے ہم نظر انتخاب لا نہ سکے

زمیں کی بات زمیں کی زباں میں کہنا تھی

ہم آسمان سے کوئی کتاب لا نہ سکے

اعزاز افضل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(459) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ezaz Afzal, Ojala Kaesa Ojalay Ka Khwaab Laa Na Skay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ezaz Afzal.