Ojalay Tel ChiRaknay Lagay OjaloN Par

اجالے تیل چھڑکنے لگے اجالوں پر

اجالے تیل چھڑکنے لگے اجالوں پر

عجیب وقت پڑا ہے چراغ والوں پر

تمہارا عالم مستی ڈھکا چھپا ہی سہی

مری نگاہ ہے ٹوٹے ہوئے پیالوں پر

تمہارے ذہن میں جو آج چبھ رہے ہوں گے

میں کل سے سوچ رہا ہوں انہیں سوالوں پر

نہ اٹھ سکا ترے طرز خرام سے پردہ

ہوائیں ڈال گئیں خاک پائمالوں پر

محاکمہ نہ کریں آپ اپنی باتوں کا

یہ کام چھوڑ دیا جائے سننے والوں پر

مسلمات سے کیوں قصد انحراف کیا

عقیدے ٹوٹ پڑے ہیں مرے سوالوں پر

یہ کیا ضرور کہ رخ سب کا ایک جانب ہو

فضا کی قید لگاؤ نہ اڑنے والوں پر

اعزاز افضل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(497) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ezaz Afzal, Ojalay Tel ChiRaknay Lagay OjaloN Par in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ezaz Afzal.