Teray Jaesa Koi Mila Hi NahiN

تیرے جیسا کوئی ملا ہی نہیں

تیرے جیسا کوئی ملا ہی نہیں

کیسے ملتا کہیں پہ تھا ہی نہیں

گھر کے ملبے سے گھر بنا ہی نہیں

زلزلے کا اثر گیا ہی نہیں

مجھ پہ ہو کر گزر گئی دنیا

میں تری راہ سے ہٹا ہی نہیں

کل سے مصروف خیریت میں ہوں

شعر تازہ کوئی ہوا ہی نہیں

رات بھی ہم نے ہی صدارت کی

بزم میں اور کوئی تھا ہی نہیں

یار تم کو کہاں کہاں ڈھونڈا

جاؤ تم سے میں بولتا ہی نہیں

یاد ہے جو اسی کو یاد کرو

ہجر کی دوسری دوا ہی نہیں

فہمی بدایونی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(3417) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fahmi Badayuni, Teray Jaesa Koi Mila Hi NahiN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Social Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fahmi Badayuni.