Raat Ik Rang Hai Ik Raag Hai Ik Khushbu Hai

رات اک رنگ ہے اک راگ ہے اک خوشبو ہے

رات اک رنگ ہے اک راگ ہے اک خوشبو ہے

مہرباں رات مرے پاس چلی آئے گی

رات کا نرم تنفس مجھے چھو جائے گا

دودھیا پھول چنبیلی کے مہک اٹھیں گے

رات کے ساتھ مرا غم بھی چلا آئے گا

اب مرے خانۂ دل میں بھی چراغاں ہوگا

یونہی ہر شب جو پگھلتی ہے سیاہی شب کی

اک لرزتا ہوا سایہ سا چلا آتا ہے

جس کے سینے میں دھڑکتا ہے طلائی مہتاب

رات کے پیار میں گم ذہن اگر یہ پوچھے

کون ہو تم مرے مہمان اندھیرے میں چھپے

چار اطراف بکھرتے ہوئے سناٹے میں

میرے افکار یونہی گونج کے رہ جاتے ہیں

ایسا لگتا ہے نہیں اور کوئی بھی موجود

بے کراں رات میں گھل جاتا ہے خود میرا وجود

فہمیدہ ریاض

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(830) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fahmida Riaz, Raat Ik Rang Hai Ik Raag Hai Ik Khushbu Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 44 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fahmida Riaz.