Tum Maray Pass Raho

تم مرے پاس رہو

تم مرے پاس رہو

مرے قاتل، مرے دل دار مرے پاس رہو

جس گھڑی رات چلے،

آسمانوں کا لہو پی کے سیہ رات چلے

مرہم مشک لیے، نشتر الماس لیے

بین کرتی ہوئی ہنستی ہوئی، گاتی نکلے

درد کے کاسنی پازیب بجاتی نکلے

جس گھڑی سینوں میں ڈوبے ہوئے دل

آستینوں میں نہاں ہاتھوں کی رہ تکنے لگے

آس لیے

اور بچوں کے بلکنے کی طرح قلقل مے

بہر نا سودگی مچلے تو منائے نہ منے

جب کوئی بات بنائے نہ بنے

جب نہ کوئی بات چلے

جب گھڑی رات چلے

جس گھڑی ماتمی سنسان سیہ رات چلے

پاس رہو

مرے قاتل، مرے دل دار مرے پاس رہو

فیض احمد فیض

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1416) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Faiz Ahmed Faiz, Tum Maray Pass Raho in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 121 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Faiz Ahmed Faiz.