Chamak Ankhoon Main Dikhti Thi Laboon Per Tazgi Si Thi

چمک آنکھوں میں دکھتی تھی لبوں پر تازگی سی تھی

چمک آنکھوں میں دکھتی تھی لبوں پر تازگی سی تھی

عجب اک نور تھا اُس پر عجب اک چاندنی سی تھی

سیاہی اور سفیدی کا حسیں تھا امتزاج اُس میں

گھٹا اُس کی گھنی زلفیں وہ خود اک روشنی سی تھی

نرالا گفتگو کرنے کا اُس میں اک سلیقہ تھا

عجب اک دلبری سی تھی عجب جادوگری سی تھی

وہ مخمل کی طرح نرم و ملائم ہاتھ تھےاُس کے

نہ چھو کر بھی لگے اُن میں کوئی چارہ گری سی تھی

مرا اُس سے تعارف ہو نہیں پایا کبھی لیکن

ابھی تک ہے خیالوں میں وہ صورت اک بھلی سی تھی

فخر عباس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(873) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fakhar Abbas, Chamak Ankhoon Main Dikhti Thi Laboon Per Tazgi Si Thi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 44 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fakhar Abbas.