Hamara Kaam Tha Khidmat Main Yeh Paigham Rakh Dena

ہمارا کام تھا خدمت میں یہ پیغام رکھ دینا

ہمارا کام تھا خدمت میں یہ پیغام رکھ دینا

ہماری صبح پر اپنی نہ کوئی شام رکھ دینا

وفا کا عہد کرتے ہیں، اگر ہم کر نہیں پائے

الٹ کر کچھ بھی اے جاناں ہمارا نام رکھ دینا

بہانے سے نہیں آنا کسی تقریب یاراں میں

کہ عین اس وقت ہی اس نے ہےکوئی کام رکھ دینا

ہمیں پہلی محبت کا نہیں دعویٰ سو ہم نے بھی

ترے قدموں میں لازم ہے دل بدنام رکھ دینا

خوشی ہوتی ہے جب کوئی نیا آتا ہے دنیا میں

تو پھر ہم سے کہا جائے کہ اس کا نام رکھ دینا

بڑھادیتا ہے جینے کی تمنا دل کے اندر بھی

خدا کا زندگانی کے لئے انجام رکھ دینا

ہم اپنا خون بخشیں گے کسی اپنی محبت کو

ہمارے سر پہ حاکم نے ہے جب انعام رکھ دینا

فخر عباس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1066) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fakhar Abbas, Hamara Kaam Tha Khidmat Main Yeh Paigham Rakh Dena in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 44 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fakhar Abbas.