Andhi

آندھی

گزرے ہیں بیس برس اک دن

اک زور کی آندھی آئی تھی

جس سے پیڑوں سے جدا ہو کر

لاکھوں ہی پتے ٹوٹ گرے

شاہراہوں پر پگڈنڈیوں پر

کھیتوں میں اور فٹ پاتھوں پر

کچھ بہہ گئے گندے نالوں میں

بھنگی کی جھاڑو کے صدقے

لیکن جو بچ گئے ان کو ہوا

ہر وقت اڑائے پھرتی ہے

پچھم کو کبھی پورب کو کبھی

وہ بکھرے پڑے ہیں اب ہر سو

اور ہر دم پستے رہتے ہیں

بھاری بھرکم بوٹوں کے تلے

فخر زمان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(997) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fakhar Zaman, Andhi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fakhar Zaman.