HaN Wohi Ishq O Mohabbat Ki Jila Hoti Hae

ہاں وہی عشق و محبت کی جلا ہوتی ہے

ہاں وہی عشق و محبت کی جلا ہوتی ہے

جو عبادت در جاناں پہ ادا ہوتی ہے

جو گرفتار محبت ہیں یہ ان سے پوچھو

ناز کیا چیز ہے کیا چیز ادا ہوتی ہے

ان کی نظروں کی حقیقت کو کوئی کیا جانے

ان کی نظروں میں ہر اک غم کی دوا ہوتی ہے

کیوں نہ چہرے پہ ملوں خاک در یار کو میں

یہی وہ خاک ہے جو خاک شفا ہوتی ہے

رائیگاں سجدے بھی ہو جاتے ہیں مقبول کرم

شامل حال اگر ان کی رضا ہوتی ہے

جانے کیا چیز چھپی ہے ترے جلووں میں صنم

ساری دنیا تیرے جلووں پہ فدا ہوتی ہے

میں بھی ہوں ایک عنایت کی نظر کا طالب

تیرے کوچے میں مریضوں کو شفا ہوتی ہے

ان کے میخانے کو چھو آتی ہے جب فصل بہار

پھول کھل جاتے ہیں مستی میں ہوا ہوتی ہے

اے فناؔ ملتا ہے عاشق کو بقا کا پیغام

زندگی جب رہ الفت میں فنا ہوتی ہے

فنا بلند شہری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1278) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fana Bulandshehri, HaN Wohi Ishq O Mohabbat Ki Jila Hoti Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Social Urdu Poetry. Also there are 37 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fana Bulandshehri.