KahiN SakoN Na Mila Dil Ko Bazm E Yaar Kay Baad

کہیں سکوں نہ ملا دل کو بزم یار کے بعد

کہیں سکوں نہ ملا دل کو بزم یار کے بعد

کہ بیقرار رہی زندگی قرار کے بعد

اٹھے نہ پاؤں محبت کی رہ گزار کے بعد

کوئی قیام نہیں ہے ترے دیار کے بعد

قبائیں چاک تو کرتے رہیں گے دیوانے

کبھی بہار سے پہلے کبھی بہار کے بعد

شراب عشق کا میکش رہا سدا مدہوش

تیری نگاہ کی مستی چڑھی خمار کے بعد

نگاہ شوق نے دونوں جہاں کو چھان لیا

لا نہ رنگ کوئی جلوہ گہہ یار کے بعد

طلب ہے اس کی تو ہو جاؤ قتل عشق فناؔ

ملی ہیں عظمتیں منصور کو بھی دار کے بعد

فنا بلند شہری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1622) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fana Bulandshehri, KahiN SakoN Na Mila Dil Ko Bazm E Yaar Kay Baad in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 63 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fana Bulandshehri.