Teri Tirchhi Nazar Ka Teer Hae Mushkil Se Niklay Ga

تری ترچھی نظر کا تیر ہے مشکل سے نکلے گا

تری ترچھی نظر کا تیر ہے مشکل سے نکلے گا

دل اس کے ساتھ نکلے گا اگر یہ دل سے نکلے گا

شب غم میں بھی میری سخت جانی کو نہ موت آئی

ترا کام اے اجل اب خنجر قاتل سے نکلے گا

نگاہ شوق میرا مدعا تو ان کو سمجھا دے

مرے منہ سے تو حرف آرزو مشکل سے نکلے گا

کہاں تک کچھ نہ کہیے اب تو نوبت جان تک پہنچی

تکلف بر طرف اے ضبط نالہ دل سے نکلے گا

تصور کیا ترا آیا قیامت آ گئی دل میں

کہ اب ہر ولولہ باہر مزار دل سے نکلے گا

نہ آئیں گے وہ تب بھی دل نکل ہی جائے گا فانیؔ

مگر مشکل سے نکلے گا بڑی مشکل سے نکلے گا

فانی بدایونی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1476) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fani Badayuni, Teri Tirchhi Nazar Ka Teer Hae Mushkil Se Niklay Ga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Social Urdu Poetry. Also there are 102 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fani Badayuni.