Yaro Hadood E Gham Se Guzarnay Laga HuN MaiN

یارو حدود غم سے گزرنے لگا ہوں میں

یارو حدود غم سے گزرنے لگا ہوں میں

مجھ کو سمیٹ لو کہ بکھرنے لگا ہوں میں

چھو کر بلندیوں سے اترنے لگا ہوں میں

شاید نگاہ وقت سے ڈرنے لگا ہوں میں

پر تولنے لگی ہیں جو اونچی اڑان کو

ان خواہشوں کے پنکھ کترنے لگا ہوں میں

آتا نہیں یقین کہ ان کے خیال میں

پھر آفتاب بن کے ابھرنے لگا ہوں میں

کیا بات ہے کہ اپنی طبیعت کے بر خلاف

دے کر زباں فراغؔ مکرنے لگا ہوں میں

فراغ روہوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(707) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Faragh Rohvi, Yaro Hadood E Gham Se Guzarnay Laga HuN MaiN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 16 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Faragh Rohvi.