Zara Sei Raat Dhal Jaey Tu Shayad Neend Aa Jaey

ذرا سی رات ڈھل جائے تو شاید نیند آ جائے

ذرا سی رات ڈھل جائے تو شاید نیند آ جائے

ذرا سا دل بہل جائے تو شاید نیند آ جائے

ابھی تو کرب ہے بے چینیاں ہیں بے قراری ہے

طبیعت کچھ سنبھل جائے تو شاید نیند آ جائے

ہوا کے نرم جھونکوں نے جگایا تیری یادوں کو

ہوا کا رخ بدل جائے تو شاید نیند آ جائے

یہ طوفاں آنسوؤں کا جو امڈ آیا ہے پلکوں تک

کسی صورت یہ ٹل جائے تو شاید نیند آ جائے

یہ ہنستا مسکراتا قافلہ جو چاند تاروں کا

فرحؔ آگے نکل جائے تو شاید نیند آ جائے

فرح اقبال

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(578) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farah Iqbal, Zara Sei Raat Dhal Jaey Tu Shayad Neend Aa Jaey in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farah Iqbal.