Zaoq E Parwaz MeiN Sabit Hoa SayyaroN Se

ذوق پرواز میں ثابت ہوا سیاروں سے

ذوق پرواز میں ثابت ہوا سیاروں سے

آسماں زیر زمیں ہے مری یلغاروں سے

کیسے قاتل ہیں جنہیں پاس وفا ہے نہ جفا

قتل کرتے ہیں تو اغیار کی تلواروں سے

رہ کے ساحل پہ ہو کس طرح کسی کو معلوم

کشتیاں کیسے نکل آتی ہیں منجدھاروں سے

گل ہوئے جاتے ہیں جلتے ہوئے دیرینہ چراغ

آئینہ خانوں کی گرتی ہوئی دیواروں سے

ہم محبت کو بس اتنا ہی سمجھتے ہیں فریدؔ

جوئے شیر آئی ہے بہتی ہوئی کہساروں سے

فرید عشرتی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(937) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fareed Ishrati, Zaoq E Parwaz MeiN Sabit Hoa SayyaroN Se in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 16 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fareed Ishrati.