Zaat Ki Teergi Ka Noha Hain

ذات کی تیرگی کا نوحہ ہیں

ذات کی تیرگی کا نوحہ ہیں

شِعر کیا ہیں، درُوں کا گِریہ ہیں

میں سمندر کبھی نہیں تھی' مگر

میرے پَیروں میں سارے دریا ہیں

اے مِرے خواب چِھیننے والے !

یہ مِرا آخری اثاثہ ہیں

جو ترے سامنے بھی خالی رہا

ہم تری دید کا وہ کاسہ ہیں

کھیل یا توڑ ۔۔۔ اب تری مرضی

ہم ترے ہاتھ میں کھلونا ہیں

عید کے دن یہ سوگ وار آنکھیں

بَد شگونی کا اِستعارہ ہیں

ہم اُداسی کے اِس دَبِستاں کا

آخری مستَند حوالہ ہیں

فریحہ نقوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2486) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fareeha Naqvi, Zaat Ki Teergi Ka Noha Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 35 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fareeha Naqvi.